Home » Interesting News » ’دنیا کے دریاﺅں میں اس ایک قسم کی مچھلی کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے جو جنسی عمل کی بجائے۔۔۔‘ سائنسدانوں نے انتہائی تشویشناک انکشاف کردیا، جان کر آپ کو مچھلیوں سے ہی ڈر لگنے لگے

’دنیا کے دریاﺅں میں اس ایک قسم کی مچھلی کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے جو جنسی عمل کی بجائے۔۔۔‘ سائنسدانوں نے انتہائی تشویشناک انکشاف کردیا، جان کر آپ کو مچھلیوں سے ہی ڈر لگنے لگے

فلوریڈا(نیوز ڈیسک)مچھلی دنیا بھر میں پسند کی جانے والی غذا ہے لیکن آج کل دریاﺅں میں ایک ایسی مچھلی دھڑا دھڑ پیدا ہو رہی ہے کہ جس کی حقیقت جان کر یقیناً آپ مچھلی کھانے سے ہی گھبرانے لگیں گے۔ امریکی سائنسدانوں نے ایک ایسی عجیب و غریب مچھلی کا سراغ لگایا ہے جو نر اور مادہ کے ملاپ کی بجائے کلوننگ کے عمل سے پیدا ہو رہی ہے اور بے پناہ تیزی کے ساتھ دنیا بھر کے دریاﺅں میں پھیلتی جا رہی ہے۔

سائنسدانوں کے مطابق یہ مچھلی جینیاتی بگاڑ کا شکا رہے جس کے باعث کلوننگ کے عمل سے غیر معمولی تیز رفتاری کے ساتھ اپنی نسل میں اضافہ کرتے ہوئے دنیا بھر کے دریاﺅں میں پھیل رہی ہے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ گزشتہ 25 سال کے دوران ’پروکیمبلس ورجی‘ نامی یہ مچھلی کروڑوں کی تعداد کو پہنچ چکی ہے۔
یہ مچھلی کرے فش کی ایک قسم ہے لیکن جینیاتی بگاڑ کے باعث ایک نئی قسم میں تبدیل ہوچکی ہے۔ یہ جتنے انڈے دیتی ہے ان سے مادہ مچھلیاں پیدا ہوتی ہیں اور ان کے انڈے نَر کے بغیر ہی فرٹیلائز ہوکر نئی مچھلیوں میں تبدیل ہوجاتے ہیں۔ ابتدائی طور پر اس مچھلی کا سراغ فلوریڈا اور جنوبی جارجیا میں لگایا گیا لیکن اب یہ کہا جارہا ہے کہ یہ دنیا بھر کے دریاﺅں میں پائی جارہی ہے۔ یورپ سے لے کر مڈغاسکر تک ہر جگہ اس کی موجودگی کے شواہد ملے ہیں۔ امریکہ اور یورپی یونین میں اس مچھلی کے استعمال پر پابندی عائد کی جاچکی ہے کیونکہ جینیاتی بگاڑ کے باعث یہ انسانی استعمال کے لئے موزوں نہیں ہے۔

 

#paksa

#paksa.co.za

Check Also

#paksa #paksa.co.za چینی انجینئر رائیونڈ سے پسند کی لڑکی بیاہ کر لے گیا

لاہور، رائیونڈ (ویب ڈیسک) چینی انجینئر رائے ونڈ سے پسندکی لڑکی بیاہ لے گیا ،شادی …