Home » Pakistani Headlines » عوام کو بنیادی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری تھی جو نہ کرسکی: چیف جسٹس

عوام کو بنیادی سہولیات فراہم کرنا حکومت کی ذمہ داری تھی جو نہ کرسکی: چیف جسٹس

پشاور(پاکستان) چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیئے ہیں کہ عوام کو بنیادی سہولیات کی فراہمی حکومت کی ذمہ داری تھی جو وہ نہ کرسکی۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے سپریم کورٹ پشاور رجسٹری میں مختلف کیسز کی سماعت کی۔چیف سیکرٹری اور ہیلتھ سیکرٹری عدالت میں پیش ہوئے۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے استفسار کیا کہ ڈبے کے دودھ کاٹیسٹ کرایاہے؟،اس پر چیف سیکرٹری نے جواب دیا کہ ڈبے کے دودھ کاٹیسٹ نہیں کرایا۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ خیبرپختونخوامیں لوڈشیڈنگ کی کیاصورتحال ہے؟،کتنی بجلی بنارہے ہیں؟۔چیف سیکرٹری نے عدالت کو بتایا کہ 75 میگاواٹ بجلی بنائی ہے،وفاقی حکومت حوصلہ افزائی نہیں کررہی۔

چیف جسٹس نے کہا کہ اس حوالے سے مکمل رپورٹ دیں،چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ قاضی انورصاحب بتائیں لوڈشیڈنگ کی کیاصورتحال ہے؟،صاف پانی اورتعلیم کیلئے آپ آوازاٹھائیں۔ہم نے پنجاب میں 1300 کمپنیاں بندکرائی ہیں۔

دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ہر اتوار کو یہاں عدالت لگانے آجاتا ہوں، عوام کوبنیادی سہولیات کی فراہمی حکومت کی ذمہ داری تھی، حکومت نہیں کرسکی اب ہم کریں گے۔

 

#paksa

#paksa.co.za

Check Also

اسلام آباد – پاک بھارت کشیدگی کی وجہ سے ایمریٹس ایر لائنز نے پاکستان کے اپنی تمام پروازیں منسوخ کردیں

Emirates cancels Pakistan, Afghanistan flights DUBAI (Reuters) – Dubai’s Emirates airline has canceled all Pakistan …