Home » Interesting News » #paksa #paksa.co.za پیار میں پاگل نوجوان شادی کرنے کے لئے اسلام چھوڑ کر ہندو ہوگیا، لیکن پھر لڑکی نے اس کے ساتھ کیا کیا؟ ایسا انجام جو اس نے کبھی سوچا بھی نہ ہوگا

#paksa #paksa.co.za پیار میں پاگل نوجوان شادی کرنے کے لئے اسلام چھوڑ کر ہندو ہوگیا، لیکن پھر لڑکی نے اس کے ساتھ کیا کیا؟ ایسا انجام جو اس نے کبھی سوچا بھی نہ ہوگا

رائے پور(مانیٹرنگ ڈیسک) اس بات میں کوئی شک نہیں کہ محبت کی خاطر لوگ تاج و تخت بھی چھوڑ دیتے ہیں، مگر اس کے باوجود کسی مسلمان سے یہ توقع کرنا کہ وہ محبت کی خاطر اپنا مذہب چھوڑ دے گا بظاہر ناممکن سی بات دکھائی دیتی ہے۔ بھارتی شہر رائے پور میں البتہ ایک مسلمان نوجوان نے ہندو لڑکی سے شادی کے لئے یہی کام کر ڈالا، مگر پھر لڑکی نے اس کے ساتھ کیا سلوک کِیا، یہ بات بھی دیکھنے لائق ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مسلمان نوجوان محمد ابراہیم صدیقی نے ریاست چھتیس گڑھ سے تعلق رکھنے والی ہندو لڑکی انجلی جین سے شادی کرنے کی خاطر رواں سال فروری میں ہندو مذہب قبول کر لیا اور اپنا نام تبدیل کر کے آریان آریہ رکھ لیا۔ لڑکی نے یہ شادی والدین کے علم میں لائے بغیر کی تھی اور اُس کا خیال تھا کہ وہ موزوں وقت پر انہیں راضی کر لے گی۔ شادی کے چند ماہ بعد جب اُس کے والدین کے علم میں یہ بات آئی تو انہوں نے اس شادی کو قبول کرنے سے انکار کر دیا۔

والدین کے انکار کے بعد انجلی کو فیصلہ کرنا تھا کہ وہ شوہر کے ساتھ جائے گی یا اُسے چھوڑ کر والدین کے پاس واپس آ جائے گی، اور اس نے والدین کا انتخاب کر لیا۔ اُس کے شوہر نے عدالت سے رجوع کیا اور مؤقف اختیار کیا کہ ا سکی بیوی کے والدین زبردستی اُسے طلاق لینے پر مجبور کر رہے ہیں لیکن جج کے سامنے پیش ہو کر انجلی نے خود کہہ دیا کہ وہ اپنے والدین کو نہیں چھوڑ سکتی۔ مختصر یہ کہ ابراہیم نے انجلی کی خاطر مذہب چھوڑ دیا، مگر انجلی نے ابراہیم کی خاطر والدین کو چھوڑنے سے انکار کر دیا، اور یوں یہ شادی اپنے انجام کو پہنچ گئی۔

Share this:

Comments

Check Also

#paksa #paksa.co.za چینی انجینئر رائیونڈ سے پسند کی لڑکی بیاہ کر لے گیا

لاہور، رائیونڈ (ویب ڈیسک) چینی انجینئر رائے ونڈ سے پسندکی لڑکی بیاہ لے گیا ،شادی …