Home » Interesting News » ’اس سال 3 جون دنیا کیلئے سب سے خطرناک تاریخ‘ ایسی پیشنگوئی منظر عام پر کہ بڑے بڑوں کے ہوش اڑادئیے

’اس سال 3 جون دنیا کیلئے سب سے خطرناک تاریخ‘ ایسی پیشنگوئی منظر عام پر کہ بڑے بڑوں کے ہوش اڑادئیے

dunia

لندن (نیوز ڈیسک) قدیم مایا تہذیب کے پر اسرار کیلنڈر کے مطابق جون 2012ءمیں زمین پر زندگی کا اختتام ہونا تھا اور کرہ ارض پر مکمل تباہی کے بعد ایک نئے دور کا آغاز ہونا تھا۔ یہ تاریخ آئی اور گزرگئی، لیکن زمین پر کوئی تباہی مسلط نہیں ہوئی، جس کے بعد لوگوں نے مایا کیلنڈر کا مذاق اڑانا شروع کردیا۔ اب تحقیق کاروں نے یہ انکشاف کرکے ایک دفعہ پھر خوف و ہراس پھیلادیا ہے کہ غلطی مایا کیلنڈر میں نہیں بلکہ ہمارے حساب کتاب میں تھی، اور اب تباہی ہمارے سر پر پہنچ گئی ہے۔
قدیم میزو امریکن فلکیات پر تحقیق کرنے والے ماہر اینتھونی ایونی نے جریدے نیشنل جیوگرافک سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ مایا تہذیب کے کیلنڈر میں لیپ کے سال کا خیال نہیں رکھا گیا، جبکہ ہمارے جدید کیلنڈر میں لیپ کا سال بھی شامل ہے، لہٰذا یہی فرق غلطی کا سبب بنا۔

وہ کہتے ہیں کہ ہمارے جدید کیلنڈر میں ایک سال 365.25دنوں کا ہوتا ہے جبکہ مایا کیلنڈر میں ایک سال پورے 365 دنوں کا ہے۔ مایا کیلنڈر کل 5126سالوں پر مشتمل ہے، جس کے اختتام پر دنیا کے خاتمے کا دعوٰی کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے کئے گئے حساب کتاب میں اس دور کا خاتمہ جون 2012ءمیں قرار دیا گیا، لیکن دونوں کیلنڈروں کے فرق کو ملحوظ خاطر رکھا جائے تو یہ تاریخ 3 جون 2016ءبنتی ہے۔
اینتھونی ایونی کا کہنا ہے کہ چونکہ درست حساب کے مطابق مایا کیلنڈر کے خاتمے کی تاریخ 3 یا 4 جون 2016ءہے، لہٰذا اس حساب سے یہی دنیا کے خاتمے کا وقت ہے۔ اب یہ تاریخ سر پر آن پہنچی ہے اور دنیا بھر میں ایک دفعہ پھر خوف و ہراس عروج پر پہنچ گیا ہے۔
تباہی کی نئی تاریخ سامنے آنے کے بعد دنیا بھرمیں بسنے والے لوگ انٹرنیٹ پر اپنی تشویش کا اظہار کررہے ہیں، جبکہ کئی لوگوں نے تو دنیا سے رخصت ہونے کی تیاری بھی شروع کردی ہے۔ بہر حال، 3 جون کو ہمارے ساتھ کیا ہونے والا ہے، یہ جاننے کے لئے اب زیادہ انتظار نہیں کرنا پڑے گا۔

Check Also

کیا سیب نظام ہاضمہ کیلئے مفید ہے؟ #paksa #paksa.co.za

آپ نے یہ جملہ تو ہر ایک سے سُنا ہوگا کہ روزانہ ایک سیب کھائیں …