Home » Interesting News » ’شیطان کے پجاری‘ نے 6 افراد کو ایک ایسی وجہ سے موت کے گھاٹ اتاردیا کہ آپ کو شدید دکھ ہوگا

’شیطان کے پجاری‘ نے 6 افراد کو ایک ایسی وجہ سے موت کے گھاٹ اتاردیا کہ آپ کو شدید دکھ ہوگا

mout

ماسکو (نیوزڈیسک) انسان جب ہوس کا پیروکار بن کر اپنی روح شیطان کو بیچ ڈالے تو وہ ایک ایسے درندے کا روپ دھار لیتا ہے جسے احساس انسانیت سے دور دور کا واسطہ نہیں رہتا۔ روسی باشندہ آرسن بے رامبے کوف بھی ایک ایسی ہی لرزہ خیز مثال ہے، جس نے اپنے شیطانی تجربات کے لئے نصف درجن بے گھر افراد کو سفاکیت کے ساتھ قتل کرڈالا۔

میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق سابق پولیس اہلکار آرسن یہ جاننا چاہتا تھا کہ وہ ان افراد کو قتل کرکے پھر سے زندہ کر سکتا ہے یا نہیں۔ رپورٹ کے مطابق اس نے بدقسمت افراد کو یکاترین برگ شہر کے مختلف علاقوں سے اغوا کیا اور انہیں قتل کرنے کے بعد پھر سے زندہ کرنے کے لئے ان پر عملیات کرتا رہا۔ حیوان صفت شخص دن کے وقت ایک عام پولیس اہلکار کے طور پر فرائض سرانجام دیتا تھا لیکن رات کے وقت ایک خونی درندے کا روپ دھار لیتا تھا۔ وہ سوشل میڈیا پر کالے علم کے جادوگر کے طور پر اپنی تشہیر بھی کرتا تھا اور خود کو شیطان کا پیروکار بھی بتاتا تھا۔

 پولیس کا کہنا تھا کہ شقی القلب مجرم نے چھ افراد کے قتل کے بعد ان پر اپنے شیطانی عملیات کئے اور سوشل میڈیا پر اپنے اس بھیانک فعل کے بارے میں فخر کے ساتھ بتایا، جس کے بعد کچھ افراد نے پولیس کو اس کے بارے میں اطلاع دی۔ شیطان صفت شخص نے تمام افراد کو چاقو کے ساتھ قتل کیا تھا اور اپنے عملیات کی ناکامی پر انہیں گڑھا کھود کر دبادیا تھا۔
اگرچہ اس نے چالاکی کا مظاہر کرتے ہوئے اپنی جان بچانے کے لئے ذہنی بیماری کا ڈھونگ رچایا لیکن ماہرین نفسیات نے اس کی مکارانہ چال ناکام بنادی۔ عدالت نے اسے 13 سال دو ماہ قید کی سزا سنائی، جبکہ مقتولین کے لواحقین کو 9لاکھ روبل (تقریباً 188لاکھ پاکستانی روپے) بطور ہرجانہ ادا کرنے کا حکم بھی دیا۔

 #paksa
#paksa.co.za

Check Also

تیزی سے پیٹ کی چربی پگھلانے والی 4 ورزشیں

دنیا بھر میں جاری لاک ڈاؤن کے دوران اگر آپ کا بھی وزن بڑھ گیا …