Home » Interesting News » عورت کے کان میں کاکروچ گھس گیا اور پھر کتنے عرصے بعد اور کیسے نکلا؟ جان کر شاید آپ چیخ اُٹھیں، جانئے

عورت کے کان میں کاکروچ گھس گیا اور پھر کتنے عرصے بعد اور کیسے نکلا؟ جان کر شاید آپ چیخ اُٹھیں، جانئے

واشنگٹن(نیوز ڈیسک) کیڑے مکوڑوں کی عقل و فہم کے متعلق کوئی کیا کہے! ان میں سے کچھ تو ایسے عقل سے پیدل ہوتے ہیں کہ انسان کے کان کو آرام دہ سوراخ جان کر اس میں گھس جاتے ہیں۔ امریکی لڑکی کیٹی ہولی کی بھی بدقسمتی تھی کہ ایک چھوٹے کاکروچ نے ان کے کان کواپنی آرام گاہ سمجھ لیا اور جب وہ سو رہی تھیں تو چپکے سے ان کے کان میں گھس گیا۔

کیٹی کہتی ہیں کہ وہ گہری نیند میں تھیں اور انہیں محسوس ہو اکہ ان کے کان میں کوئی ٹھنڈی چیز داخل ہورہی ہے۔ وہ اچھل کر اُٹھ بیٹھیں اور انہیں یوں لگا تھا گویا برف کا ٹکڑا کسی نے ان کے کان میں ڈالا تھا۔ وہ بھاگتی ہوئی واش روم میں گئیں اور روئی والی باریک سلائی اپنے کان میں پھیرنا شروع کردی۔ تب انہیں اپنے کان کے اندر حرکت کا احساس ہوا اور وہ خوف سے چیخ اُٹھیں۔ یہ کوئی زندہ چیز تھی جو آہستہ آہستہ ان کے کان کے اندر مزید آگے بڑھتے جارہی تھی۔ کیٹی کا کہنا ہے کہ ان کے گھر میں کاکروچوں کی کثرت تھی، خصوصاً اڑنے والے چھوٹے کاکروچ جنہیں پالمیتو کہا جاتا ہے کافی تعداد میں پائے جاتے ہیں۔ ان کے ذہن میں پہلا خیال یہی آیا کہ کوئی کاکروچ ان کے کان میں گھس گیا تھا۔

ہولی کی چیخ و پکار سن کر ان کے خاوند جورڈن بھی مدد کو پہنچ گئے۔ جورڈن نے ٹارچ سے ہولی کے بائیں کان میں روشنی ڈالی تو انہیں وہ چیز نظر آگئی۔ اس کا کچھ پچھلا حصہ دکھائی دے رہا تھا جس سے لگتا تھا کہ وہ پالمیتو کاکروچ ہی تھا۔ وہ دونوں فوری طور پر ہسپتال روانہ ہوگئے جہاں ایمرجنسی میں پہنچتے ہی ہولی نے ڈاکٹر کو بتایا کہ اس کے کان میں کاکروچ گھس گیا ہے۔ ایک نرس نے ان کے کان میں کوئی محلول ڈالا جس کی وجہ سے کاکروچ نے شدید ہلچل شروع کردی اور تقریباً دو منٹ بعد اس کی حرکت ختم ہوگئی۔ ڈاکٹر نے چند منٹ بعد ایک چمٹی کے ذریعے کاکروچ کو باہر نکالنا شروع کیا اور اس کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے کان سے باہر آنے لگے۔ کان کی صفائی کے بعد انہیں کچھ اینٹی بائیوٹک ادویات اور قطرے لکھ کر دئیے گئے اور دو گھنٹے بعد ہسپتال سے رخصت کردیا گیا۔

کیٹی کا کہنا ہے کہ ایک ہفتے تک وہ ادویات کا استعمال کرتی رہیں لیکن ان کے کان میں تکلیف کا احسا س موجود رہا۔ تب وہ ایک سپیشلسٹ ڈاکٹر کے پاس گئیں اور جب اس نے معائنہ کیا تو پتہ چلا کہ کاکروچ کا کچھ حصہ ابھی تک ان کے کان میں باقی تھا۔ اس ڈاکٹر نے متعدد ٹیسٹ کئے اور پھر ان کے اندرونی حصے میںپھنسا کاکروچ کا باقی حصہ بھی نکالا۔ اس کے بعد ایک بار پھر ان کے کان کی مکمل صفائی کی گئی۔ کیٹی کا کہنا ہے کہ بالآخر تقریباً دو ہفتے بعد پہلی بار انہیں اطمینان محسوس ہوا اور وہ خود کو یقین دلا سکیں کہ بالآخر سارا کاکروچ ان کے کان سے نکل گیا ہے۔

 

#paksa

#paksa.co.za

Check Also

تیزی سے پیٹ کی چربی پگھلانے والی 4 ورزشیں

دنیا بھر میں جاری لاک ڈاؤن کے دوران اگر آپ کا بھی وزن بڑھ گیا …