Home » Technology & Gadgets » فیس بک خلا میں کیا کرنے جارہا ہے؟ ایسی خبر جس پر کسی کو یقین نہ آئے لیکن ثبوت سامنے آگئے

فیس بک خلا میں کیا کرنے جارہا ہے؟ ایسی خبر جس پر کسی کو یقین نہ آئے لیکن ثبوت سامنے آگئے

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) فیس بک سماجی رابطے کی دیگر ویب سائٹس سے تو کوسوں آگے تھا ہی، اب اس نے معروف خلائی کمپنی سپیس ایکس کو بھی چیلنج دینے کا فیصلہ کر لیا ۔ میل آن لائن کے مطابق ایف سی سی کی دستاویزات سے انکشاف ہوا ہے کہ فیس بک خفیہ طور پر انٹرنیٹ سیٹلائٹ تیار کر رہا ہے جسے خلاءمیں بھیج کر وہ سپیس ایکس پر غلبہ پانے کی کوشش کرے گا۔ ایف سی سی کی اس نئی فائیلنگ سے معلوم ہوا ہے کہ اس سیٹلائٹ کا نام ایتھینا (Athena)ہو گا اور اس کی تیاری پر اربوں ڈالر لاگت آئے گی۔

اگر اس سیٹلائٹ کو منظوری مل گئی تو یہ انتہائی مو¿ثر طریقے سے پوری دنیا کو براڈ بینڈ فراہم کرنے کے قابل ہو گی۔ اس کے بعد دنیا کا کوئی حصہ ایسا نہیں رہے گا جہاں انٹرنیٹ موجود نہ ہو۔ فیس بک کے لیے یہ سیٹلائٹ ’پوائنٹ ویو ٹیک ایل ایل سی‘ نامی کمپنی تیار کر رہی ہے۔ پوائنٹ ویو ٹیک کے متعلق کہا جاتا ہے کہ یہ فیس بک ہی کی ذیلی کمپنی ہے۔ آئی ای ای ای سپیکٹرم بھی اس کی تصدیق کر چکا ہے۔ اس کے اور بھی کئی شواہد موجود ہیں، مثال کے طور پر فیس بک اور پوائنٹ ویو ٹیک کے کئی اثاثے، حتیٰ کہ سٹاف ممبرز بھی مشترکہ ہیں۔پوائنٹ ویو نے دنیا میں تین جگہیں بھی مختص کر دی ہیں جہاں سے یہ سٹیلائٹ ڈیٹا وصول کرے گی اور بھیجے گی۔ ان میں ایک لاس اینجلس کے قریب واقع بزنس پارک کا وہ علاقہ ہے جہاں فیس بک نے آفس کے لیے جگہ حاصل کر رکھی ہے، اس سے بھی ظاہر ہوتا ہے کہ اس سیٹلائٹ کے منصوبے سے فیس بک کا تعلق ہے۔پوائنٹ ویو کے حکام کو امید ہے کہ وہ 2019ءمیں اس سیٹلائٹ کو لانچ کرنے میں کامیاب ہو جائے گی۔ ابتدائی طور پر اسے دو سال کے عرصے کے لیے تجرباتی طور پر لانچ کیا جائے گا۔

 

#paksa

#paksa.co.za

Check Also

#paksa #paksa.co.za مارک ذکر برگ نے فیس بک کی سینئرمینجمنٹ کو آئی فون سے اینڈرائڈ فون پر منتقل ہونے کا مشورہ دے دیا

نیو یارک(آن لائن )سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بک کے بانی مارک زکربرگ نے …