Home » Interesting News » ’میری 3 سالہ بیٹی بہت زیادہ خوبصورت تھی اس لئے میں نے اسے۔۔۔‘ باپ نے جج کے سامنے ایسی بات کہہ دی کہ کمرہ عدالت میں موجود ہر شخص کانپ اُٹھا

’میری 3 سالہ بیٹی بہت زیادہ خوبصورت تھی اس لئے میں نے اسے۔۔۔‘ باپ نے جج کے سامنے ایسی بات کہہ دی کہ کمرہ عدالت میں موجود ہر شخص کانپ اُٹھا

beti

پرتھ (نیوز ڈیسک) خوبصورت اولاد قدرت کے انمول تحفوں میںسے ایک ہے اور دنیا میں ایسے لوگوں کی کمی نہیں جو عمر بھر اس نعمت کی حسرت میں گزاردیتے ہیں، مگر آسٹریلیا میں ایک بدبخت شخص نے اپنی ننھی بیٹی کو محض اس وجہ سے پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی کہ وہ بے حد خوبصورت تھی۔
دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق 43 سالہ ایڈورڈ ہربرٹ کی اہلیہ نے بتایا کہ وہ نصف شب کے قریب شراب کے نشے میں دھت ہوکر کہنے لگا ”12 بجے بھیڑیا آنے والا ہے، اب یہ معالہ ختم ہوچکا، میں تمہیں ہلاک کرنے والا ہوں۔ “ اس کے بعد وہ اٹھا اور پٹرول اٹھا کر اپنی بیٹیوں کے کمرے میں چلا گیا ۔ اس نے پہلے اپنی 77 سالہ بیٹی پر پٹرول چھڑکا اور پھر تین سالہ بیٹی پر پٹرول چھڑک کر اسے آگ لگادی۔ بچی کی دردناک چیخیں سن کر اس کی والدہ بھاگتی ہوئی کمرے میں پہنچیں اور دریں اثناءہمسایہ خاتون ڈینیل میک ملن بھی پہنچ گئی۔

ڈینیل نے بتایا کہ ایڈورڈ کو اپنے سفاکانہ فعل پر کوئی پچھتاوا نہیں تھا بلکہ انہیں دیکھتے ہی وہ کہنے لگا”یہ میرے بچے ہیں میں ان کے ساتھ جو چاہے کروں۔“ جب اسے عدالت میں پیش کیا گیا تو درندہ صفت شخص نے اعترف جرم کرتے ہوئے کہا ” میں نے اپنی چھوٹی بیٹی کو اس لئے جلادیا کہ وہ کچھ زیادہ ہی خوبصورت تھی۔“

 متاثرہ بچی کا ہسپتال میں علاج جاری ہے۔ دریں اثناءملزم کے خلاف قانونی کارروائی کا بھی آغاز ہوچکا ہے ۔ بھیانک جرم کے اعتراف کے اب بعد اس نے موقف اختیار کرلیا ہے کہ وہ کثرت شراب نوشی سے پاگل ہوچکا تھا لہٰذا اسے معاف کر دیا جائے۔ مقدمے کی کارروائی جاری ہے۔

#paksa 
#paksa.co.za

Check Also

تیزی سے پیٹ کی چربی پگھلانے والی 4 ورزشیں

دنیا بھر میں جاری لاک ڈاؤن کے دوران اگر آپ کا بھی وزن بڑھ گیا …