Home » Interesting News » وہ گاؤں جس کے رہنے والے نوجوان دھڑا دھڑ شام میں جاکر جنگ لڑنے لگے، یہ کون سا گاؤں ہے؟ جان کر آپ کی حیرت کی بھی انتہا نہ رہے گی

وہ گاؤں جس کے رہنے والے نوجوان دھڑا دھڑ شام میں جاکر جنگ لڑنے لگے، یہ کون سا گاؤں ہے؟ جان کر آپ کی حیرت کی بھی انتہا نہ رہے گی

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا بھر سے شدت پسندانہ خیالات کے حامل افراد کے شام جا کر داعش میں شامل ہونے کی خبریں تو آتی رہی ہیں لیکن اب روس کے ایک گاؤں سے نوجوانوں کے اتنی بڑی تعداد میں شام جا کر جنگ میں حصہ لینے کی خبر سامنے آ گئی ہے کہ سن کر ہرکوئی دنگ رہ جائے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق اس قصبے کا نام کیدرووئے ہے جہاں کے نوجوان بڑی تعداد میں روس کی نجی فوجی کمپنیوں میں بھرتی ہو کر شام جا رہے ہیں اور جنگ میں حصہ لے رہے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق روس کی 200سے زائد روسی نجی فوجی کنٹریکٹرزاس وقت شام میں اپنی خدمات فراہم کر رہے ہیں ۔ ان کے بھرتی کردہ اہلکاروں میں ایک بڑی تعداد اس گاؤں کے نوجوانوں کی ہے۔ شام میں موجود اس گاؤں کے نوجوانوں کی تعداد کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ دنوں کرد جنگجوؤں اور امریکی فوج نے مل کر ایک فوجی اڈے کو نشانہ بنایا جہاں ہلاک ہونے والے ڈیڑھ درجن لوگوں میں سے 7کا تعلق اس گاؤں سے تھا۔ان میں 37سالہ رسلان گیوریلوف نامی شخص بھی شامل تھاجس کی والدہ فرخانور گیوریلووا کا کہنا تھا کہ ’’مجھے میرے بیٹے کے ساتھ شام میں موجود ایک لڑکے نے فون کرکے بتایا کہ امریکی فوج کے اس حملے میں ہلاک ہونے والوں میں میرا بیٹا بھی شامل ہے۔ ‘‘ اس نے بتایا کہ ’’ہمارے گاؤں کی آبادی 2300کے لگ بھگ ہے اور نوجوانوں کی اکثریت نجی سکیورٹی کمپنیوں میں بھرتی ہو کر شام جا چکی ہے۔‘‘واضح رہے کہ روسی فوج کی طرف سے بھی پہلی بار نجی کمپنیوں کی طرف سے جانے والے جنگجوؤں کی ہلاکت کی تصدیق کر دی گئی ہے۔ تاہم اس نے یہ تعداد 5بتائی ہے۔

 

 

#paksa

#paksa.co.za

Check Also

تیزی سے پیٹ کی چربی پگھلانے والی 4 ورزشیں

دنیا بھر میں جاری لاک ڈاؤن کے دوران اگر آپ کا بھی وزن بڑھ گیا …