Home » Interesting News » #paksa #paksa.co.za اسلام کی سب سے بڑی دشمن اس لڑکی نے ایسا کام کردیا کہ جان کر ہر مسلمان کو شدید غصہ آجائے

#paksa #paksa.co.za اسلام کی سب سے بڑی دشمن اس لڑکی نے ایسا کام کردیا کہ جان کر ہر مسلمان کو شدید غصہ آجائے

میلبرن(نیوز ڈیسک) اسلام دشمنی کے باعث دنیا میں بھر میں بدنام کینیڈا کی شعلہ بیان خاتون سیاستدان لارن سدرن کی نفرت انگیز تقاریر کے باعث برطانیہ میں اس کے داخلے پر پابندی عائد ہوئی تو اس نے اسلام کے خلاف زہر اگلنے کے لئے آسٹریلیا کا رخ کرلیا ہے۔ جولائی کے مہینے میں آسٹریلیا کے مختلف شہروں میں وہ اپنے ساتھی مبلغ سٹیفن مولی نووکس کے ساتھ مل کر اسلام کے خلاف تقاریر کرے گی۔ گزشتہ دنوں جب اس نے اپنی تقاریر کی تشہیر کے لئے انتہائی توہین آمیز پمفلٹ تقسیم کرنے کا سلسلہ شروع کیا تو پولیس کو مداخلت کرکے اسے روکنا پڑا۔

کینیڈا میں یہ خاتون لبرٹیرین پارٹی کی رکن ہے اور گزشتہ تین انتخابات میں امیدوار کے طور پر بھی سامنے آچکی ہے۔ کینیڈا میں منعقد ہونے والے ایک انتہائی متنازعہ احتجاج میں شرکت پر پارٹی نے اسے نکال دیا تھا۔ گزشتہ چند سالوں کے دوران مسلمانوں کے خلاف بدترین پراپیگنڈہ کے باعث وہ خاصی بدنام ہوچکی ہے۔ صرف مسلمان ہی نہیں بلکہ یورپ میں بسنے والی دیگر اقلیتوں کے خلاف بھی وہ اکثر زہرفشانی کرتی رہتی ہیں۔

لارن پر عائد کی گئی پابندی کے حوالے سے برطانوی دفتر داخلہ کا کہنا ہے کہ بارڈر فورس کسی بھی ایسے شخص پر پابندی عائد کرسکتی ہے جس کی موجودگی برطانیہ میں مفاد عامہ کے حق میں نہیں ہے۔ لارن کی طرح اس کا ساتھی مبلغ مولی نووکس بھی اسلام اور تارکین وطن کے بارے میں اپنے زہریلے خیالات کے باعث پہچانا جاتا ہے۔ وہ مسلمانوں کو یورپی کلچر کے لئے خطرہ قرار دیتا ہے اور حال ہی میں اس نے اپنے یوٹیوب اکاؤنٹ پر آسٹریلیا کے لوگوں کو خبردار کیا ہے کہ مسلمانوں کی وجہ سے وہ عنقریب اپنے کلچر سے محروم ہونے والے ہیں۔ آج کل وہ ہر جگہ یہ تبلیغ کرتا پھرتا ہے کہ یورپ اور اس کے کلچر کو بچانے کے لئے مسلمان تارکین وطن کی یورپی ممالک آمد کو روکنا ہوگا ورنہ وہ وقت دور نہیں جب مسلمان یورپ پر چھاجائیں گے اور یورپی کلچر کا نام و نشان نہیں رہے گا۔

Check Also

تیزی سے پیٹ کی چربی پگھلانے والی 4 ورزشیں

دنیا بھر میں جاری لاک ڈاؤن کے دوران اگر آپ کا بھی وزن بڑھ گیا …