Home » Interesting News » #paksa #paksa.co.za متحدہ عرب امارات میں پہلی مرتبہ اسرائیلی جھنڈا لہرانے کی اجازت دے دی گئی، لیکن کیوں؟ وجہ جان کر آپ کو بے حد حیرت ہوگی

#paksa #paksa.co.za متحدہ عرب امارات میں پہلی مرتبہ اسرائیلی جھنڈا لہرانے کی اجازت دے دی گئی، لیکن کیوں؟ وجہ جان کر آپ کو بے حد حیرت ہوگی

ابوظہبی(مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ عرب امارات میں اگلے ماہ انٹرنیشل جوڈو ٹورنامنٹ منعقد ہو رہا ہے جس میں شرکت کے لئے دیگر ممالک کے ساتھ اسرائیل کی ٹیم بھی پہنچ رہی ہے۔ گزشتہ سال بھی یہ مقابلے متحدہ عرب امارات میں منعقد ہوئے تھے، اور اسرائیلی ٹیم کی وجہ سے ہی ایک بڑا جھگڑا پیدا ہو گیا تھا۔ اس بار البتہ یہ فیصلہ ہو گیا ہے کہ دیگر ممالک کی طرح اسرائیل کا جھنڈا بھی اماراتی سرزمین پر لہرایا جائے گا اور اس کا ترانہ بھی پڑھا جائے گا۔

ویب سائٹ مڈل ایسٹ کے مانیٹر کے مطابق ابوظہبی گرینڈ سلیم کا انعقاد 25 سے 27 اکتوبر تک ہوگا، جس میں دیگر عرب ممالک کے علاوہ اسرائیل بھی شرکت کرے گا۔پہلے تو یہ اشارے مل رہے تھے کہ اس بار بھی متحدہ عرب امارات میں اسرائیلی جھنڈا لہرانے یا اسرائیلی ترانہ پڑھنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، لیکن جب انٹرنیشنل جوڈو فیڈریشن نے دھمکی دی کہ ایسا کیا گیا تو متحدہ عرب امارات سے مقابلوں کے انعقاد کا حق چھین لیا جائے گا تو یہ فیصلہ سامنے آیا کہ دیگر ممالک کی طرح اسرائیل کا جھنڈا بھی لہرایا جائے گا اور اس کا ترانہ بھی پڑھا جائے گا۔

انٹرنیشنل جوڈو فیڈریشن کی جانب سے جاری کئے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ اس بات کا اعلان خوشی کے ساتھ کیا جا رہا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں جوڈے مقابلوں کے انعقاد کے موقع پر تمام ممالک اپنا جھنڈا لہرانے اور ترانہ پڑھنے کے برابر کے حق دار ہوں گے۔ گزشتہ سال منعقد ہونے والے انٹرنیشنل جوڈے مقابلوں میں اماراتی حکام نے اس وقت اسرائیلی جھنڈا لہرانے اور اسرائیل کا ترانہ پڑھے جانے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا تھا جب دو اسرائیلی کھلاڑی سونے اور کانسی کا تمغہ جیت گئے تھے۔ انٹرنیشنل فیڈریشن نے اس صورتحال پر اسرائیل سے معذرت طلب کی تھی اور یقین دہانی کروائی تھی کہ آئندہ ایسا نہیں ہوگا۔

 

Check Also

تیزی سے پیٹ کی چربی پگھلانے والی 4 ورزشیں

دنیا بھر میں جاری لاک ڈاؤن کے دوران اگر آپ کا بھی وزن بڑھ گیا …