Home » Interesting News » #paksa #paksa.co.za وائی فائی کے سگنلز کی وجہ سے ہمارے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟ جان کر آپ کو انٹرنیٹ استعمال کرنے سے ہی ڈر لگنے لگ جائے گا

#paksa #paksa.co.za وائی فائی کے سگنلز کی وجہ سے ہمارے جسم میں کیا تبدیلی آتی ہے؟ جان کر آپ کو انٹرنیٹ استعمال کرنے سے ہی ڈر لگنے لگ جائے گا

اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک) سمارٹ فونز اور وائی فائی کے سگنلز کینسر کا سبب بنتے ہیں یا نہیں؟ اس سوال پر طویل عرصے سے بحث جاری ہے اور اب کینسر کے ایک چوٹی کے ماہر نے اس کے متعلق ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ سن کر ہی آدمی انٹرنیٹ کے استعمال سے خوفزدہ ہو جائے۔ میل آن لائن کے مطابق کینیڈا کی ٹورنٹو یونیورسٹی کے پروفیسر انتھونی ملر نے کہا ہے کہ ’’ریڈیائی لہریں، جو بیس یونٹ سے موبائل فونز اور دیگر ڈیوائسز تک وائی فائی سگنلز کی ترسیل کرتی ہیں، انسان کو کینسر میں مبتلا کرنے کا سبب بنتی ہیں اور یہ ریڈیائی لہریں کینسر کے حوالے سے اتنی ہی خطرناک ہیں جتنی تمباکو نوشی۔‘‘

پروفیسر انتھونی کینیڈا کے نیشنل کینسر انسٹیٹیوٹ کے ایپیڈیمیالوجی یونٹ کے ڈائریکٹر بھی رہ چکے ہیں اور ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن اور جرمن کینسر ریسرچ سنٹر سمیت کئی عالمی اداروں میں بھی اعلیٰ عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ’’وائی فائی سگنلز کی ترسیل کرنے والی ریڈیائی لہریں سب سے زیادہ کم عمر افراد پر اثرانداز ہوتی ہیں لہٰذا سکولوں میں وائی فائی پر مکمل پابندی عائد کی جانی چاہیے تاکہ طلبہ ان لہروں کے مہلک اثرات سے محفوظ رہ سکیں۔اس وقت ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم اپنے بچوں کو ان مہلک لہروں سے بچانے کے لیے ہوش مندانہ پیشگی حفاظتی اقدامات کریں۔ ہم نے تمباکو نوشی کی ابتداء میں غفلت کا مظاہرہ کیا تھا اور آج وہ دنیا میں کینسر لاحق ہونے کی سب سے بڑی وجہ بن چکی ہے۔ سمارٹ فونز اور وائی فائی کی مہلک لہروں کے انسداد کے سلسلے میں اگر ہم نے دوبارہ اسی غفلت کا مظاہرہ کیا توبعد میں تمباکونوشی کی طرح ہم اسے بھی نہیں روک پائیں گے اور مستقبل میں کینسر کا مرض ایک وباء کی شکل اختیار کر لے گا۔

واضح رہے کہ پروفیسر انتھونی اس انتہائی خطرے کا اظہار کرنے والے پہلے شخص نہیں ہیں۔ اس سے قبل بھی کئی ممتاز سائنسدان موبائل فونز اور وائی فائی وغیرہ کی برقی مقناطیسی لہروں کوانسانوں کے لیے سنگین خطرہ قرار دے چکے ہیں۔ ان میں سے اکثر کا کہنا تھا کہ مستقبل میں ان لہروں کی وجہ سے کینسر کسی وبائی مرض کی طرح دنیا میں پھیل جانے کا امکان ہے۔حال ہی میں فرانسیسی سائنسدانوں کی ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ موبائل فونزسے نکلنے والی برقی مقناطیسی شعاعیں انسان کو دماغ کا کینسر لاحق ہونے کے خطرے میں پانچ گنا اضافہ کر رہی ہیں۔

 

Check Also

#paksa #paksa.co.za چینی انجینئر رائیونڈ سے پسند کی لڑکی بیاہ کر لے گیا

لاہور، رائیونڈ (ویب ڈیسک) چینی انجینئر رائے ونڈ سے پسندکی لڑکی بیاہ لے گیا ،شادی …