Home » Interesting News » #paska #paksa.co.za میڈیکل سائنس کے وہ راز جو قرآن میں 1400 سال پہلے ہی لکھ دئیے گئے، کون کون سی باتیں ہیں؟ جان کر آپ کا بھی ایمان تازہ ہوجائے گا

#paska #paksa.co.za میڈیکل سائنس کے وہ راز جو قرآن میں 1400 سال پہلے ہی لکھ دئیے گئے، کون کون سی باتیں ہیں؟ جان کر آپ کا بھی ایمان تازہ ہوجائے گا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)اہل مغرب کو اس بات پر بڑا فخر ہے کہ اُن کی سائنس اور ٹیکنالوجی نے حیرت انگیز ترقی کر لی ہے اور قدرت کے پُر اسرار راز شب و روز دریافت کئے جا رہے ہیں۔ بہت اچھی بات ہے، علمی ترقی پر فخر ہونا بھی چاہیئے، مگر دیکھئے کیسی دلچسپ بات ہے کہ سائنس نے صدیوں کی جستجو کے بعد جو راز دریافت کئے ہیں کتاب مبین قرآن مجید میں وہ سب باتیں 14 صدیاں پہلے ہی بیان ہو چکی ہیں۔

سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر پر @mboldt ہینڈل سے ٹویٹ کرنے والے ایک صاحب نے قرآنی آیات کے حوالوں کے ساتھ ایسی بہت سی باتوں کا تذکرہ کیا ہے جو 1400 سال قبل ہی قرآن حکیم میں بیان ہو چکی ہیں، مگر سائنس آج اُن باتوں تک رسائی حاصل کرنے کی کوشش کررہی ہے۔

مثال کے طور پر ایمبریونک ڈویلپمنٹ کے بارے میں حالیہ دریافتوں کو میڈیکل سائنس کی انقلابی کامیابی قرار دیا جاتا ہے، مگر قرآن مجید نے 1400 سال قبل وضاحت سے بتادیا کہ بچے کی تخلیق کا عمل کس طرح شروع ہوتا ہے، کیسے مختلف مراحل سے گزرتا ہے اور بالآخر کس طرح تکمیل کے درجے کو پہنچتا ہے۔ قرآن مجید کی تعلیمات سے واقفیت رکھنے والے سائنسدان البتہ اس بات بات پر ضرور حیران ہیں کہ 1400 سال قبل تو کوئی ایسی ٹیکنالوجی موجود نہیں تھی جس سے یہ تمام باتیں جانی جاسکتیں۔ قرآن مجید میں مردانہ سپرم کی بناءپر جنس کے تعین کے حوالے سے بھی رہنمائی ملتی ہے مگر سائنس نے 1400 سال بعد ایکس اور وائی کروموسوم کے بارے میں جاناہے۔

سائنس کے دیگر شعبوں کی بات کی جائے تو لوہے کی اہمیت کیا ہے ، یہ کہاں سے آتا ہے، اور انسان کے لئے اس کے فوائد کیا ہیں، یہ بھی ایسی معلومات ہیں جو 14صدیاں قبل کی دنیا میں انسان کے علم میں کسی طرح سے نہیں آسکتی تھیں مگر قرآن مجید نے یہ سب کچھ بیان کر دیا۔

سائنس کی ایک اور حیرتناک دریافت cosmic dustیعنی ”کائناتی راکھ“ کو جدید علم فلکیات کی پیچیدہ ترین دریافتوں میں شمار کیا جاتا ہے لیکن قرآن مجید کی تعلیمات پر غور کریں تو ہمیں اس کے بارے میں بھی رہنمائی ملتی ہے۔جدید دور کے سائنسدان اس بات سے بھی اتفاق کرتے ہیں کہ قرآن مجید میں کاسمک ڈسٹ کے حوالے سے بہترین اصطلاح استعمال کی گئی ہے۔

زمین کی گردش کے متعلق سامنے آنے والی سائنسی دریافتوں کو ابھی زیادہ عرصہ نہیں گزرا البتہ قرآن مجید میں اس کا احوال 14صدیاں قبل ہی بیان کردیا گیا ہے۔ اسی طرح قرآن مجید میں دو ایسے سمندروں کا احوال بیان کیا گیا ہے جو ساتھ ساتھ بہتے ہیں مگر ان کا پانی آپس میں ملتا نہیں۔ آج کے سائنسدانوں کو بحیرہ روم اور بحراوقیانوس کے پانی کے متوازی بہنے اور ایک دوسرے میں نہ ملنے کے بارے میں معلوم ہوا ہے تو وہ قرآن میں بیان کی گئی بات پر حیرت میں مبتلاءہیں۔

مختصر یہ کہ جدید سائنس کی وہ کون سی دریافت ہے جسے ہم قرآن کی روشنی میں دیکھیں تو یہ انکشاف نا ہو کہ ہمیں تو صدیوں پہلے اس کی رہنمائی دی جا چکی ہے۔ یہ ہدایت البتہ انہی کے لئے ہے جو اس کے متلاشی ہوں۔ افسوس کہ ہم مسلماں ہو کر بھی اُس عظیم خزانے سے لاتعلق ہو چکے ہیںجو اہل مغرب محض علم کی جستجو اور لگن کے باعث دریافت کرتے چلے جا رہے ہیں۔

Check Also

#paksa #paksa.co.za چینی انجینئر رائیونڈ سے پسند کی لڑکی بیاہ کر لے گیا

لاہور، رائیونڈ (ویب ڈیسک) چینی انجینئر رائے ونڈ سے پسندکی لڑکی بیاہ لے گیا ،شادی …